الیکشن کمیشن نے وزیراعظم عمران خان کو نوٹس جاری کردیا


الیکشن کمیشن میں فارن فنڈنگ کیس کی سماعت۔۔۔ الیکشن کمیشن کا وزیراعظم عمران خان کو نوٹس جاری

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اکبر ایس بابر کی درخواست پر چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اور تحریک انصاف کو پارٹی کے طور پر بھی نوٹس جاری کردیا

اکبر ایس بابر نے سکروٹنی کمیٹی کی جانب سے دستاویزات فراہم نہ کرنے کے فیصلے کو چیلنج کر رکھا ہے۔

اس موقع پر اکبر ایس بابر کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ کمیشن نے اپریل 2019 میں ہی فیصلہ کیا تھا کہ اسکروٹنی کمیٹی کی ضرورت ہے،

ممبر کے پی ارشاد قیصر نے سوال کیا کہ الیکشن کمیشن نے کیا اس پر کوئی حکم نامہ دیا ہے؟
اکبر ایس بابر کے وکیل کا مزید کہنا تھا کہ ایسا لگ رہا ہے کہ اسکروٹنی کمیٹی کی کارروائی صرف دکھاوا ہے، اسکروٹنی کمیٹی ہمیں کوئی کاغذ دینے کو تیار نہیں، ہمارے ثبوتوں کے جواب میں جو رکارڈ پی ٹی آئی نے دیا وہ ہم سے خفیہ کیوں رکھاجارہا ہے؟
دلائل دیتے ہوئے اکبر ایس بابر کے وکیل نے مزید کہا کہ معلومات تک رسائی کا قانون ہمیں رکارڈ تک رسائی کا حق دیتا ہے، اسکروٹنی کمیٹی میں پیش کیے گئے رکارڈ تک رسائی ہمارا قانونی حق ہے۔

سپریم کورٹ کو عمران خان کے بیان کا نوٹس لینا چاہیے، وزیراعظم کا بیان اداروں کو دباؤ میں لانے کے مترادف اور ایک آئینی ادارے پر حملہ ہے