این اے 75 ڈسکہ، سپریم کورٹ نے فیصلہ سنادیا


بریکنگ نیوز :این اے 75 ڈسکہ پورے حلقے میں ہی دوبارہ الیکشن ہوگا، سپریم کورٹ نے فیصلہ سنا دیا

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے تحریک انصاف کی درخواست مسترد کردی ہے اور پورے حلقے میں دوبارہ پولنگ کرانے کا حکم دیا ہے۔

اس سے قبل کیس کی سماعت کے دوران جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیے کہ 20 پولنگ اسٹیشنز پر قانون کی خلاف ورزیاں تو ہوئی ہیں اور الیکشن کے دوران فائرنگ سے 2 افراد قتل اور ایک زخمی ہوا، الیکشن کمیشن ڈسکہ میں مناسب اقدامات کرنے میں ناکام رہا۔

سپریم کورٹ نے مزید کہا کہ الیکشن کمیشن نے انتظامیہ کو سنے بغیر فیصلہ دیا، حلقے میں حالات خراب تھے ، یہ کہنا درست نہیں کہ تمام پارٹیوں کو مقابلے کے لیے مساوی ماحول نہیں ملا، ووٹرز کیلئے مقابلے کے مساوی ماحول کا لفظ استعمال نہیں ہوتا۔

جسٹس عمرعطابندیال نے کہا کہ الیلشن کمیشن کو پورے حلقہ میں ری پولنگ کا فیصلہ دینے سے تحریک انصاف کے امیدوار کو نوٹس دینا چاہئے تھا۔

عدالت کا مزید کہنا تھا کہ 10 پولنگ افسران ایک جگہ اکٹھے پائے گئے،پہلے کبھی ایسے انتخابی عملہ لاپتہ نہہں ہوا