جوبائیڈن کے مدعو نہ کرنے پراحسن اقبال کے عمران خان پر طنز وطعن کے تیر


ماحولیاتی تبدیلی سربراہی اجلاس میں پاکستان کو مدعو نہ کئے جانے پر احسن اقبال کے عمران خان پر طنز وطعن کے تیر

امریکی صدر جو بائیڈن کی جانب سے آئندہ ماہ 22 اور 23 اپریل کو ماحولیاتی تبدیلی سربراہی اجلاس طلب کیا گیا جس میں خطے سے بھارت، بنگلہ دیش اور بھوٹان جیسے ممالک شامل ہیں مگر پاکستان یا اس کے کسی نمائندے کو مدعو نہیں کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق وائٹ ہاؤس کی جانب سے اعلامیہ جاری کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ پیرس معاہدے کے مطابق ماحولیاتی تبدیلی پر سربراہی اجلاس آئندہ ماہ22 اپریل کو طلب کیا گیا ہے جو کہ دو روز تک چلے گا، جس میں ارجنٹینا، آسٹریلیا، بنگلہ دیش، برازیل، بھوٹان، کینیڈا، چلی، چین اور کولمبیا سمیت 40 ممالک کے سربراہان کو مدعو کیا گیا ہے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیر داخلہ احسن اقبال نے اس اجلاس کے طلب کیے جانے پر اعتراض کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت ، بنگلہ دیش اور بھوٹان جیسے ممالک کو مدعو کیا گیا ہے مگر پاکستان کے وزیراعظم کو اس اجلاس میں شرکت کی دعوت کیوں نہیں دی گئی۔

انہوں نے اپنی تنقید کو سیاسی پہلو دیتے ہوئے کہا کہ مگر سونامی ٹری فراڈ والے مفتی عمران نیازی مدعو نہیں کئے گئے، جبکہ پاکستان دنیا کے پہلے 10 ماحولیاتی تبدیلی سے متاثر ممالک میں شامل ہے۔