عدالتوں کا احترام ختم ہو جائے تو پھر معاملات خونی انقلاب سے حل ہوتے ہیں، چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ


ہائیکورٹ بار راولپنڈی کی جانب سے جسٹس طارق عباسی اور جسٹس مشتاق کےلیے الوداعی اعزازی تقریب منعقد کی گئی جہاں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس محمد قاسم خان نے کہا کہ جن معاشروں میں عدالت کا احترام ختم ہو جائے تو وہاں پھر خونی انقلاب آتا ہے۔

چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے کہا مظلوم اور مفلوک الحال افراد کو فوری انصاف دینا ہوگا، وقت بدل چکا ہے اب تعلیم یافتہ اور معاشی طور پر مضبوط لوگ انصاف کے لیے عدالتوں کا رخ کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کیسز میں بے جا تاریخ دینے سے پرہیز کیا جائے، چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کا کہنا تھا کہ ججز اپنے ریڈر کے ذریعے آنکھیں بند کر کے ڈیڑھ دو ماہ کی تاریخ نہ دیں، کیونکہ جو جج اپنی ذمہ داری صحیح ادا کرتا نظر نہ آیا تو اس کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔

چیف جسٹس محمد قاسم خان نے کہا کہ ان تمام باتوں سے ہی عدلیہ کا احترام ختم ہوتا ہے اور جب کسی معاشرے میں عدالتوں کا احترام نہ کیا جائے تو پھر وہاں معاملات کے حل کے لیے خونی انقلاب آتا ہے۔