فیصل آباد میں سفاکیت کی انتہا، لڑکی کو قتل کرنے کے بعد نہر میں پھینک دیا گیا


فیصل آباد: صوبہ پنجاب کے ضلع فیصل آباد میں تالاب سے لاپتا لڑکی کی لاش برآمد ہوئی ہے۔

پولیس کے مطابق نواحی علاقے اعظم آباد سے چند روز قبل لڑکی لاپتہ ہوئی تھی، جس کی لاش اچکیرہ میں تالاب سے مل گئی۔

پولیس کی جانب سے جاری ابتدائی بیان کےمطابق لڑکی کو خورشید ، اسحاق اور ساتھیوں نے ملازمت دلانے کے بہانے بلایا اور مبینہ زیادتی کے بعد قتل کر کے لاش تالاب میں پھینک دی۔

واقعے کے بعد سے ملزمان فرار ہیں جن کی تلاش کے لئے مختلف مقامات پر چھاپے مارے جارہے ہیں۔

دوسری جانب لواحقین نے وزیراعلیٰ پنجاب سمیت اعلیٰ حکام سے فوری انصاف کی اپیل کی ہے۔

واضح رہے کہ پنجاب میں بچوں سمیت لڑکیوں سے مبینہ زیادتی کے واقعات تیزی سے رپورٹ ہورہے ہیں، گذشتہ ماہ لاہور میں جنسی زیادتی کا واقعہ سامنے آیا تھا، جہاں پب جی گیم پر دوستی کرنے والی لڑکی کو مبینہ زیادتی کا نشانہ بنادیا گیا تھا۔

اکتوبر میں ڈی جی خان میں نجی تعلیمی اکیڈمی میں طالبات سے مبینہ زیادتی کی ویڈیوز نے سنسنی پھیلائی تھی، جہاں طالبات کو مختلف حیلے بہانوں سے اکیڈمی میں لا کر انہیں مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا تھا اور پھر بلیک میل کیا جاتا تھا۔

ستمبر میں پنجاب کے ضلع بہاولنگر کی تحصیل منچن آباد میں 12 سالہ بچی کو مبینہ زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا تھا۔