لڑکی جانب سے پولیس اہلکارکو تشدد کا نشانہ بنانے کا معاملہ ، سی سی پی او عمر شیخ نے موقع پر موجود اہلکاروں کو ٹیلیفون کر کے کیا کہا ؟ پتا چل گیا


لاہورگزشتہ رات لاہور کے علاقے ڈیفنس فیز فائیو میں خاتون کی جانب سے پولیس اہلکاروں کو تشدد کا نشانہ بنانے کے معاملے پر سی سی پی او لاہور عمر شیخ نے نوٹس لے لیاہے اور اے ایس پی کینٹ سے رپورٹ طلب کر لی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق سی سی پی او لاہور عمر شیخ نے نجی ٹی وی چینل سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں نے موقع پر موجود پولیس اہلکاروں کو ٹیلیفون کر کے تحمل کا مظاہرہ کرنے پر اپنے بیٹوں کو شاباش دی ہے ، پولیس اہلکاروں ، جوانوں اور افسروں کو سوسائٹی میں عزت ملنی چاہیے ۔ ان کا کہناتھا کہ میر اپیغام یہی ہے کہ خاتون کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔

یاد رہے کہ سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو تیزی کے ساتھ وائرل ہو رہی ہے جس میں ایک نوجوان لڑکی جو کہ گلابی رنگ کے ٹاپ اور نیلے رنگ کی جینز کی پینٹ میں ملبوس ہے مسلسل پولیس اہلکاروں پر چڑھائی کرتی دکھائی دیتی ہے ۔ یہ واقعہ لاہور کے علاقے ڈیفنس فیز فائیو میں واقع ایک نجی کافی شاپ کے باہر گزشتہ رات پیش آیاہے ۔ پولیس اہلکاروں کا موقف ہے کہ گاڑی میںبیٹھے لڑکا اور لڑکی شراب پی رہے تھے اور جب پولیس اہلکاروں نے چھان بین کیلئے روکا تو لڑکی آپے سے باہر ہو گئی ۔

لاہور ڈیفنس فیز فائیو کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد سی سی پی او لاہور عمرشیخ نے نوٹس لیے لیاہے اور رپورٹ طلب کر لی ہے ۔گزشتہ رات پیش آنے والے واقعہ میں اے ایس آئی محمود احمد کی مدعیت میں تھانہ ڈیفنس بی میں مقدمہ درج کر لیاگیاہے اور ملزمان کی تلاش شروع کر دی گئی ہے ۔