لیبیا کےساحل پر74تارکین وطن ڈوب کرہلاک


لیبیا کے ساحل پر 74 تارکین وطن ڈوب کر ہلاک ہوگئے۔

امریکی میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ کے ادارے برائے مہاجرین انٹرنیشنل آرگنائزیشن فار مائیگرینٹس کا کہنا ہے کہ لیبیا میں خمس نام کے ساحل پر ایک کشتی ڈوبنے سے 74افراد ہلاک ہوگئے۔

کشتی میں 120 مہاجرین سوار تھےجن میں سے 47 کو بچالیا گیا ہے جبکہ 31 افراد کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں۔ کشتی میں خواتین اور بچے بھی سوار تھے،کوسٹ گارڈز کی جانب سے تارکین وطن کی تلاش جاری ہے۔

دوسری جانب اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ اکتوبر کے بعد سے ہجرت کرنے والوں کی تعداد میں ریکارڈ اضافہ ہوا ہے۔

واضح رہے کہ بحیرہ روم میں مہاجرین کی کشتیوں کے ڈوبنے اب تک کم از کم 8 واقعات پیش آچکے ہیں۔

آئی او ایم کی رپورٹ کے مطابق رواں سال بحیرہ روم میں اب تک کم از کم 900 افراد ڈوب چکے ہیں جبکہ11 ہزار سے زائد افراد کو جنگ زدہ علاقے لیبیا واپس بھیجا گیا ہے۔

اقوام متحدہ کے مطابق واپس بھیجے گئے مہاجرین کو لیبیا میں انہیں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں، قید، استحصال، بردہ فروشی اور مختلف نوعیت کی زیادتیوں کا سامنا ہے۔

آئی او ایم کے اعداد و شمار کے مطابق 2014 سے بحیرہ روم میں اب تک تقریبا 20 ہزار مہاجرین ہلاک ہوچکے ہیں۔