میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کے دعوے کی سماعت ، وکیل نے علی ظفر کے ساتھ لینا غنی کی تصاویر عدالت میں پیش کر دیں ،یہ کب کی ہیں ؟ جانئے


اسلام آباد عدالت میں علی ظفر کی جانب سے میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کے دعوے کی سماعت کے دوران میشاشفیع کی گواہ لیناغنی کے بیان پر وکلاءکی جرح جاری ہے ۔ایڈیشنل سیشن جج اظةر رانجھا کیس کی سماعت کر رہے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق علی ظفر کے وکیل نے جرح کرتے ہوئے کہا کہ عورت مارچ کیلئے فنڈز کہاں سے آتے ہیں ، لیناغنی نے جواب دیا کہ عوام سے چندہ لیاجاتا ہے ، باہر سے نہیں ، وکیل علی ظفر نے پوچھا کہ کیا اس کا کوئی آڈٹ بھی ہوتا ہے یا نہیں ، لینا غنی نے جواب دیا کہ نہیںاس کاکوئی آڈٹ نہیں ہوتا ہے ۔

علی ظفر کے وکیل نے عورت مارچ میں استعمال ہونے والے پلے کارڈزعدالت میں پیش کر دیئے ، وکیل نے پوچھا کہ مارچ میں جو پلے کارڈزلائے جاتے ہیں کیاآپ ان کی اجازت دیتی ہیں ، لیناغنی نے جواب دیا کہ ہماری کمیٹی صرف مارچ منعقد کرواتی ہے ، پلے کارڈز لوگ خود لاتے ہیں ۔ لینا غنی نے کہا کہ علی ظفر کے ساتھ کبھی کوئی پراجیکٹ نہیں کیاہے ، کالج میں ایک بار کسی ڈرامے میں علی ظفر کے ساتھ کام کیا تھا ۔ وکیل نے غلی ظفر کے ساتھ لینا غنی کی پرانی تصاویر عدالت میں پیش کر دیں ، لینا نے کہا کہ علی کے ساتھ کالج دور میں اچھا تعلق تھا ، یہ تب کی تصاویر ہیں جب میری علی ظفر سے دوستی تھی