نانا کا خواب، 14 سال کا انتظار اور ڈیبیو میچ پر پانچ وکٹوں کی شاندار کارکردگی، نعمان علی پاکستانیوں کے ہیرو بن گئے


کراچی  نانا کا خواب پورا کرنے کیلئے 14 سال انتظار کرنے والے 34 سالہ نعمان علی جنوبی افریقہ کے خلاف ریکارڈ کارکردگی دکھا کر پاکستانیوں کے ہیرو بن گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق 34 کی عمر میں قومی ٹیم میں شامل ہونے والے نعمان علی نے جنوبی افریقہ کیخلاف نیشنل سٹیڈیم کراچی میں جاری ٹیسٹ میچ میں پانچ وکٹیں حاصل کر کے پاکستان کے بارہویں کھلاڑی اور چوتھے سپنر ہونے کا اعزاز اپنے نام کیا اور قومی ٹیم کی جیت کی بنیاد رکھنے میں بھی کلیدی کردار ادا کیا۔

نعمان علی نے پروٹیز کو اپنے سپن کے جال میں پھنساتے ہوئے ڈیبیو میچ میں ہی پانچ وکٹیں حاصل کیں اور پاکستان کے چوتھے سپنر بن گئے، ان سے قبل شاہد خان آفریدی، بلال آصف اور نذیر جونیئر بھی ٹیسٹ ڈیبیو پر پانچ، پانچ وکٹیں حاصل کر چکے ہیں۔

واضح رہے کہ نعمان علی نے جنوبی افریقہ کیخلاف پہلے ٹیسٹ میچ میں ڈیبیو کو اپنے مرحوم نانا کے نام کرتے ہوئے کہا تھا کہ میں نے ٹیسٹ کرکٹ میں پاکستان کی نمائندگی کرنے کیلئے ہی ساری زندگی کرکٹ کھیلی ہے اور آج میرا اور میرے اہل خانہ کا یہ خواب حقیقت کا بدل گیا ہے۔ میرے گھر والوں نے ہمیشہ میری بھرپور سپورٹ کی اور میری کامیابی کی وجہ بھی یہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ٹیسٹ کیپ حاصل کرتے وقت مجھے اپنے نانا بہت یاد آئے جو ہمیشہ سے ہی مجھے پاکستان کی جانب سے ٹیسٹ میچ کھیلتے دیکھنا چاہتے تھے۔ نعمان علی نے ڈومیسٹک کرکٹ کی اچھی کارکردگی کو جاری رکھنے کا عزم ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ڈومیسٹک کرکٹ کی کارکردگی کا صلہ ملنا اعزاز کی بات ہے اور میں اپنی کارکردگی جاری رکھنے کی کوشش کروں گا۔