نواز شریف کے برطانیہ میں قیام کیلئے ویزے میں کتنی توسیع کا امکان؟نواز شریف کی برطانیہ میں درخواست

خبر رساں ادارے کی جانب سے دعویٰ سامنے آیا ہے کہ علاج کی غرض سے لندن جانے والے سابق پاکستانی وزیراعظم نواز شریف نے 18 نومبر کو ویزہ کی مدت ختم ہونے پر طبی بنیاد پر ویزے کی معیاد بڑھانے کے لیے برطانوی لاء فرم کی وساطت سے درخواست دائر کر دی ہے۔

درخواست میں موقف اپنایا گیا ہے کہ کورونا وبا کے باعث ان کو ڈاکٹروں کی عدم دستیابی کے باعث علاج کرانے میں مشکلات پیش آ رہی ہیں اور وہ ابھی اپنا علاج مکمل نہیں کرا سکے لہٰذا ان کے ویزہ کی معیاد بڑھا دی جائے۔ خبر رساں ادارے کا دعویٰ ہے کہ ویزہ کی مدت 6 ماہ تک بڑھ سکتی ہے۔

یاد رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف جو کہ کرپشن اور منی لانڈرنگ کیس میں احتساب عدالت کی جانب سے سزا کاٹ رہے تھے ان کو وفاقی حکومت کی جانب سے نومبر 2019 میں علاج کی غرض سے لندن جانے کی اجازت دی گئی تھی۔

برطانوی ویزہ قوانین کے مطابق وزٹ ویزہ پر آنے والے کسی بھی شخص کو ویزہ کی مدت بڑھنے کی صورت میں ایک بار برطانیہ سے باہر نکل کر دوبارہ داخل ہونا ہوتا ہے مگر شدید بیماری کی صورت میں نواز شریف کو اس شرط میں رعایت مل سکتی ہے۔ کیونکہ درخواست میں بتایا گیا ہے کہ نواز شریف شدید علیل ہیں اور وہ سفر نہیں کر سکتے۔

لیگی ذرائع کے مطابق نواز شریف کی درخواست منظور ہو چکی ہے تاہم برطانوی حکام کی جانب سے ابھی اس کی تصدیق یا تردید نہیں کی گئی۔ لیگی ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ امید ہے کہ نواز شریف کی درخواست منظور کر کے ویزہ کی مدت بڑھا دی جائے گی۔