وزیراعظم نے سینیٹ انتخابات کیلئے پارٹی ٹکٹوں کی تقسیم پر نظر ثانی کا عندیہ دیدیا


وزیراعظم عمران خان نے سینیٹ انتخابات میں حصہ لینےکیلئے اپنی جماعت کی ٹکٹوں کی تقسیم کے فیصلے پر نظر ثانی کا عندیہ دیا ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خا ن کی زیر صدارت تحریک انصاف کے پارلیمانی بورڈ کا اجلاس منعقد ہوا جس شریک اراکین پارلیمنٹ نے ٹکٹوں کی تقسیم پر اپنےتحفظات کا اظہار کیا ۔

رپورٹ کے مطابق اراکین اسمبلی نے سندھ اسمبلی سے رہنما پی ٹی آئی فیصل واوڈا کو ٹکٹ دینے کے فیصلے پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ فیصل واوڈا ممکنہ نااہلی سے بچنے کیلئے سینیٹ کے رکن منتخب ہونا چاہتے ہیں۔

اجلاس میں شریک رہنماؤں نے وزیراعظم کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ سندھ اسمبلی سے دوسرے امیدوار سیف اللہ ابڑو سے متعلق کارکنا ن میں تشویش پائی جاتی ہے، سیف اللہ ابڑو نیب زدہ شخصیت ہیں ، اسی طرح رہنماؤں نے خیبر پختونخوا اسمبلی سے نجیب اللہ خٹک اور فیصل سلیم کو ٹکٹ دیئے جانے کے فیصلے پر بھی اعتراضات وزیراعظم کی گوش گزار کیے۔

وزیراعظم عمران خان نے ٹکٹوں کی تقسیم کے فیصلےپر نظر ثانی اور تبدیلی کا عندیہ دیا اور کہا کہ سینیٹ کے انتخابات کیلئے ٹکٹوں کی تقسیم میرٹ پر ہوگی ، اس فیصلے میں کارکنان کی خواہشات کا احترام کیاجائے گا اور کسی پیراشوٹر کو جماعت کی ٹکٹ پر سینیٹر منتخب نہیں کروائیں گے۔

وزیراعظم عمران خان نے جن چار امیدواروں پر اعتراضات لگائے گئے ان سے متعلق کہا کہ ان اعتراضات اور ان امیدواروں پر لگائے گئے الزامات کی تحقیقات خود کرواؤں گا۔

واضح رہے کہ چند روز پہلے بلوچستان اسمبلی سے ممکنہ امیدوار عبدالقادر کو ٹکٹ دیئے جانے پر تحریک انصاف بلوچستان کی جانب سے مخالفت کی گئی تھی اور اس فیصلے کو مسترد کیا گیا تھا جس کے بعد یہ ٹکٹ عبدالقادر سے واپس لے کر ظہور آغا کو جاری کردیا گیا تھا۔