وہ وزارت جس میں 2020-21 کی آڈٹ رپورٹ میں 792 ارب سے زائد کی بے ضابطگیوں کا انکشاف


اسلام آباد آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی سال 2020-21 کی رپورٹ میں وزارت آبی وسائل کی وزارت میں 792 ارب روپے سے زائد کی بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق رپورٹ کا کہناہے کہ475.59 ارب روپے کی بے ضابطگیاں مختلف پراجیکٹس میں خریداری کے عمل کے دوران پائی گئی ہیں جبکہ 287.30 ارب روپے کی بے ضابطگیاں 17 کیسز میں مالی معاملات سے متعلق سامنے آئی ہیں ۔آڈٹ رپورٹ میں بے ضابطگیوں میںملوث افسران کے خلاف کارروائی کی تجویز دی گئی ہے ۔