پاورسیکٹر کیلئے بڑی خوشخبری،گنے کے پھوک والی آئی پی پیز بھی ٹیرف کم کرنے پر راضی


اسلام آباد پاورسیکٹر کیلئے بڑی خوشخبری آگئی،گنے کے پھوک والی آئی پی پیز بھی ٹیرف کم کرنے پر راضی ہو گئیں، اس سے قبل شمسی توانائی والی آئی پی پیز بھی ٹیرف کم کرنے پررضامند ہوئیں ۔

نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق ذرائع کاکہنا ہے کہ حکومتی مذاکراتی ٹیم اورگنے کے پھوک والی آئی پی پیز میں راضی نامہ طے پاگیا، گنے کے پھوک والی 8 آئی پی پیزمعاہدے کے مطابق ٹیرف کرم کریں گی ،دونوں پارٹیاں وفاقی کابینہ کی منظوری کے بعد معاہدے پر دستخط کریں گی ،معاہدے کی آئی پی پیزکے اپنے بورڈز کی جانب سے بھی منظوری ہوناضروری ہے

ٹیرف کی کمی سے مستقبل میں سستی بجلی اورگردشی قرضوں میں کمی آئے گی ،تیل دشمسی کے بعد اب گنے کی پھوک و الی پی پیز نے معاہدہ کرلیا،ماہر معاشیات مزمل اسلم نے کہاہے کہ پھوک والی آئی پی پیز کے ٹیرف میں کمی کامعاہدہ اہم کامیابی ہے ،اس کامیابی کے نتیجے میں حکومت 850 ارب روپے بچائے گی ،معاہدے سے گزشتہ حکومتوں کی پیداکردہ مشکلات میں کمی آئے گی ۔

معاہر معاشیات نے کہاکہ معاہدے سے بجلی کی قیمتیں بڑھنے کی رفتار میں کمی آئے گی،حکومت سالانہ ٹیکس 4 ہزار ارب روپے جمع کرتی ہے ،2300 ارب روپے گردشی قرضہ ہوتوملک کیسے چل سکتاہے ،بجلی گھروں کو زیادہ ادائیگی کے بجائے یہ پیسہ عوام پر خرچ ہو گا،2 ڈیمز بھی بن رہے ہیں عوام کو سستی بجلی ملے گی ۔

خرم شہزاد کاکہناہے کہ آئی پی پیز سے معاہدوں پر نظرثانی حکومت کااچھااقدام ہے ،معاہدے سے عوام کومستقبل میں سستی بجلی ملے سکی گی ،دنیا بھی کوئلے اورتیل سے بجلی بنانے سے نکل رہی ہے ،حکومت کے ایسے اقدامات سے آئندہ سالوں میں عوام کو فائدہ ہوگا،خرم شہزاد نے کہاکہ معاہدے سے سٹاک ایکس چینج پر بھی مثبت اثرپڑے گا،گردشی قرضے مہنگی بجلی بننے اورسستی بیچنے سے ہوتے ہیں ،ایسے اقدامات سے گردشی قرضے کم ہونگے۔