پاکستانی سائنسدانوں کا بڑا کارنامہ ملکی تاریخ میں پہلی بار مصنوعی نسل پروری سے اونٹ کی پیدائش کا کامیاب تجربہ


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)زرعی یونیورسٹی فیصل آباد کے سائنسدانوں نے ملکی تاریخ میں پہلی بار مصنوعی نسل پروری سے اونٹ کی پیدائش کا کامیاب تجربہ کر لیاہے ۔روزنامہ جنگ کی رپورٹ کے مطابق اونٹ کی اعلیٰ نسل کو محفوظ کرنے کے ساتھ دودھ اور گوشت کی معیاری پیداوار میں اضافہ ممکن بنایا جا سکے گا۔

ڈین کلیہ ویٹرنری سائنسز ڈاکٹر ظفر اقبال قریشی نے کیمل بریڈنگ اینڈ ریسرچ سٹیشن ماہی ضلع بھکر میں نومولود اونٹ کا معائنہ کیا ۔ ڈاکٹر محمد سلمان وقاص اور قمر بخاری بھی ان کے ہمراہ تھے۔ ڈاکٹر ظفر اقبال قریشی نے بتایا کہ مصنوعی نسل پروری کے ذریعے مصنوعی طور پر حاملہ ہونے والی ملک کی پہلی اونٹنی سے صحت مند اونٹوں کی نسل نو کو پروان چڑھانے سے تحقیق کی نئی راہیں کھل سکیں گی۔ انہوں نے کہا کہ شعبہ تھیریوجینیالوجی کے اساتذہ ڈاکٹر محمدسلمان وقاص، ڈاکٹر انجم مسعود اور ایم فل سکالرز پر مشتمل ٹیم نے مٹریجہ نسل کی اونٹنی میں سیمن کولیکشن اور سیمن ایکسٹینشن کے عمل کے ذریعے مصنوعی حمل پروان چڑھانے کا کامیاب اور پاکستان میں اپنی نوعیت کا پہلا تجربہ کیا ہے۔