پاکستان میں کروناویکسین مفت فراہم کی جائےگی

پارلیمانی سیکرٹری صحت ڈاکٹر نوشین حامد نے کرونا کیخلاف جنگ میں خوشخبری سناتے ہوئے کہا ہے کہ اگلے سال اپریل تک 2021 تک پاکستان میں کوویڈ-19 ویکسین عوام کو فراہم کردی جائے گی۔

ڈاکٹر نوشین حامد کا کہنا ہے کہ پاکستان میں ویکسین کے بہت حوصلہ افزا نتائج ہیں، پبلک سیکٹر میں ویکسین فری آف کاسٹ فراہم کی جائے گی۔ امید ہے اپریل 2021 کے اوائل تک ویکسین کو عوام تک پہنچادیا جائےگا۔

نوشین حامد نے کہا کہ چین کے تعاون سے ملک میں کرونا وبا کے آغاز میں ایک لیبارٹری تھی تاہم اب تعداد بڑھ کر 150سے تجاوز کرگئیں ہیں۔

پارلیمانی سیکرٹری صحت نے مزید کہا کہ بیڈز اور وینٹی لیٹرز کی تعداد بڑھادی گئی ہے جبکہ وینٹی لیٹرز سے زیادہ ضرورت آکسیجن بیڈ کی ہے۔ جس کے لیے حکومت نے ملک بھر میں 2500آکسیجن بیڈ کا اضافہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پہلی وفعہ ویکسین دنیا میں بن رہی ہے، ویکسین باڈی میں اینٹی باڈیز بناتی ہے،حتمی کچھ نہیں کہہ سکتے کہ ہر سال ویکسین لگانی پڑے گی یا نہیں۔