پاکستان کا وہ شہر جہاں مزدوروں کی قلت ہوگئی، معیشت کے لیے بڑی خبر آگئی


فیصل آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس اور دیگر وجوہات کی بناءپر حالیہ عرصے میں دیگر کاروباروں کی طرح فیصل آباد کی ٹیکسٹائل انڈسٹری بھی زبوں حالی کا شکار رہی تاہم اس طرف سے اب اچھی خبر آ گئی ہے۔ پاکستان ٹوڈے کے مطابق فیصل آباد کی ٹیکسٹائل انڈسٹری کا پہیہ ایک بار پھر رواں دواں ہونے لگا ہے جہاں 50ہزار پاور لومز آپریشنل ہو چکی ہیں اور آئندہ ہفتوں میں 30ہزار مزید آپریشنل ہونے جا رہی ہیں۔

انڈسٹری کے واپس اپنے پیروں پر آنے کے سبب شہر میں مزدوروں کی قلت پیدا ہو گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق ماضی میں ٹیکسٹائل انڈسٹری بجلی کی لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے شدید متاثر ہوتی رہی اور اب اسے کورونا وائرس کی وجہ سے شدید دھچکا پہنچا تاہم اب انڈسٹری کئی سالوں بعد ایک بار پھر عروج کی طرف بڑھ رہی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق فیصل آباد میں 13لاکھ کے لگ بھگ مزدور کام کرتے ہیں جن میں سے 10لاکھ مقامی اور 3لاکھ دیگر اضلاع سے آتے ہیں۔ بلومبرگ کے مطابق حالیہ ہفتوں میں پاکستان کی ٹیکسٹائل مصنوعات کی برآمدات بنگلہ دیش اور بھارت کی نسبت زیادہ تیزی سے بڑھی ہیں۔ ستمبر میں پاکستانی مصنوعات کی برآمدات میں 7فیصد اضافہ ہوا۔ اس کے برعکس بھارتی مصنوعات میں 6فیصد اور بنگلہ دیشی مصنوعات میں 3.5فیصد اضافہ ہوا۔