پاکستان کے امیر ترین خاندان اور ان کے اثاثے

0
1221


عام طور پر پاکستان کا شمار دنیا کے غریب ممالک میں کیا جاتا ہے- لیکن اس کے باوجود اگر پاکستان کے چند امیر ترین خاندانوں کے اثاثوں پر نظر ڈالی جائے تو ایسا محسوس ہوتا ہے کہ پاکستان کا غربت سے دور دور سے بھی کوئی واسطہ نہیں ہے- یہ خاندان اس حد تک امیر ہیں کہ ایک عام آدم اس کا تصور بھی نہیں کرسکتا -آئیے پاکستان کے سال 2018 کی 10 سرفہرست امیر ترین خاندانوں پر ایک نظر ڈالتے ہیں-

 

 

 

 

 

دیوان یوسف فاروقی فیملی
یہ پاکستان کے بہت بڑے صنعتکار ہیں- ان کی متعدد کمپنیاں ہیں جن میں دیوان مشتاق گروپ٬ دیوان فاروقی موٹرز٬ تین بڑی ٹیکسٹائل ملز٬ موٹر سائیکل مینوفیکچرنگ کمپنی اور پاکستان کی سب سے بڑی شوگر مل شامل ہے- اس کے علاوہ یہ خاندان دیوان سلیمان فائبر کمپنی کا مالک بھی ہے جسے دنیا کی 11 ویں سب سے زیادہ مصنوعات بنانے والی کمپنی کا اعزاز حاصل ہے- ان کی چھ کمپنیاں کراچی اسٹاک ایکسچینج میں بھی رجسٹر ہیں- یہی نہیں اس کے علاوہ ان کے بی ایم ڈبلیو اور رولز رائس کمپنیوں کی گاڑیوں کے شوروم بھی ہیں- اس فیملی کے اثاثوں کی مالیت 800 ملین ڈالر ہے جو پاکستانی کرنسی میں 98 ارب 68 روپے بنتے ہیں-

 

 

 

 

طارق اور نسیم سہگل فیملی
جہلم سے تعلق رکھنے والے اس خاندان نے اپنے کاروبار کا آغاز 1890 میں ایک جوتے بنانے والی دکان سے کی تھی- اور آج وہ کوہ نور ربڑ ورکس کے نام سے جانی جاتی ہے- انہوں نے 1948 میں کوہ نور ٹیکسٹائل ملز کی بنیاد بھی رکھی- 1958 میں یہ یونائیٹڈ بینک کے مالک بھی بن گئے- اس خاندان کے اثاثوں کی مالیت 850 ملین ڈالر یعنی پاکستانی 1 کھرب 484 کروڑ روپے ہے-

 

 

 

رفیق حبیب اور رشید حبیب فیملی
یہ خاندان مشہور حبیب بینک کا مالک ہے اور اس کے عنلاوہ اس خاندان کی تقریباً 100 کمپنیاں ہیں جو پاکستان اور بیرونِ ملک میں موجود ہیں- 1941 میں حبیب بینک کی بنیاد رکھی گئی- یہ خاندان حبیب بینک اے جی زیورچ اور بینک الحبیب کا بھی مالک ہے- اس خاندان کے اثاثوں کی مالیت 900 ملین ڈالر ہے جو کہ پاکستانی کرنسی میں 1 کھرب 1100 کروڑ روپے بنتے ہیں

 

 

 

عبدالرزاق یعقوب فیملی
حاجی عبدالرزاق یعقوب دبئی سے تعلق رکھنے والے بہت بڑی پاکستانی بزنس مین تھے- یہ فیملی اے آر وائی گروپ کی مالک ہے اور یہ گروپ 7 میڈیا چینلز کو کنٹرول کرتا ہے- اس کے علاوہ یہ خاندان کراچی٬ اسلام آباد اور دبئی میں 200 ملین ڈالر کی جائیدادوں کا بھی مالک ہے- یہ خاندان سونے کے کاروبار میں بھی شہرت رکھتا ہے اور ان کی ایشیا میں 20 گولڈ فرنچائز ہیں- اس خاندان کے اثاثوں کی مالیت 1 بلین ڈالر ہے یعنی پاکستانی 123 ارب روپے-

 

 

 

 

ناصر شون فیملی
یہ خاندان شون گروپ آف کمپنیز کا مالک ہے- انہوں نے اپنے کاروبار کا آغاز 1982 میں سنگاپور میں کیا تھا- یہ نیشنل فائبر٬ شون بینک5 شون ٹیکسٹائل اور پاک چائنا فرٹیلائزرز کے بھی مالک ہیں- اس گروپ نے اپنا ہیڈ کوارٹر دبئی میں قائم کر رکھا ہے- اس فیملی کے اثاثوں کی مالیت 1 بلین ڈالر سے زائد ہے جو پاکستانی کرنسی میں 123 ارب روپے سے بھی زیادہ بنتے ہیں-

 

 

 

 

 

صدرالدین ہاشوانی فیملی
یہ خاندان ہاشو گروپ کا مالک ہے جو بنیادی طور پر پاکستان کی بہت بڑی ہوٹل انڈسٹری ہے- یہ خاندان رئیل اسٹیٹ کا کاروبار بھی کرتا ہے- اس کے علاوہ یہ روئی٬ اناج اور اسٹیل بھی بہت بڑے پیمانے پر ایکسپورٹ کرتے ہیں- اس گروپ کے کانیں٬ ٹیکسٹائل ملز اور انشورنس کمپنیاں بھی ہیں- اس خاندان کے اثاثوں کی مالیت 1.1 بلین ڈالر ہے یعنی پاکستانی 1 کھرب 3500 کروڑ روپے

 

 

 

 

نواز اور شہباز شریف فیملی
شریف فیملی پاکستان کے بہت بڑے بزنس مین اور سیاستدان ہیں- اس خاندان نے 1990 میں بہت زیادہ ترقی کی اور اتفاق گروپ کے مالک بن گئے- ان کے پاکستان٬ سعودی عرب٬ انڈیا اور لندن میں متعدد کاروبار ہیں- اس کے علاوہ ان پر متعدد سرکاری منصوبوں میں کرپشن کا الزام بھی ہے- کہا جاتا ہے ان منصوبوں گھپلا کر کے اس خاندان نے اپنا کاروبار چمکایا- اس خاندان کے اثاثوں کی مالیت 1.4 بلین ڈالر ہے یعنی پاکستانی 1 کھرب 7200 کروڑ روپے-

 

 

 

 

سر انور پرویز فیملی
یہ خاندان بیسٹ وے گروپ کا مالک ہے- انہوں نے اپنی کمپنی کی شروعات 1976 میں لندن سے کی تھی- اس وقت یہ صرف ایک کیش اینڈ کیری کمپنی تھی لیکن آج ان کی 50 سے زائد برانچز ہیں- اس کے علاوہ بیس وے کے نام سے ان کا سیمنٹ کا پلانٹ بھی ہے- یہ خاندان پراپرٹی٬ بینکنگ اور ہول سیل کا کاروبار بھی کرتا ہے- اس فیملی کے اثاثوں کی مالیت 1.5 بلین ڈالر ہے جو کہ پاکستانی کرنسی میں 1 کھرب 8500 کروڑ روپے بنتے ہیں-

 

 

 

 

 

آصف علی زرداری فیملی
آصف علی زرداری پاکستان کے مقبول ترین سیاستدان ہیں- ان کی قسمت کا ستارہ اس وقت چمکا جب ان کی کی شادی دنیا کے مقبول ترین سیاستدان ذوالفقار علی بھٹو کی صاحبزادی بےنظیر بھٹو سے ہوئی جو کہ خود بھی ایک بڑی سیاستدان سمجھی جاتی تھیں- آصف علی زرداری پر بھی کئی کرپشن کے الزام ہیں- ان کی اربوں کی جائیداد برطانیہ٬ سعودی عرب٬ آسٹریلیا٬ امریکہ اور دنیا کے کئی ممالک میں ہے- ان کے بےشمار کاروبار ہیں اور سب سے زیادہ شوگر ملز ہیں- اس خاندان کے اثاثوں کی مالیت 1.8 بلین ڈالر بتائی جاتی ہے- جو کہ پاکستانی کرنسی میں 2 کھرب 2100 کروڑ روپے بنتی ہے-

 

 

 

 

میاں محمد منشا فیملی
اس خاندان کی 40 کمپنیاں ہیں٬ یہ ایم سی بی بینک کے مالک ہیں٬ ان کی 17 ملین ڈالر کی پیپر مل بھی ہے اس کے علاوہ یہ نشاط گروپ آف کمپنیز کے بھی مالک ہیں- نشاط گروپ میں ٹیکسٹائل ملز٬ لیزنگ کمپنیاں٬ منیجمنٹ کمپنیاں اور انشورنس کمپنیاں شامل ہیں- یہ پاکستان کا سب سے امیر ترین خاندان ہے جس کے اثاثوں کی مالیت 2.5 بلین ڈالر ہے یعنی پاکستانی 3 کھرب 700 کروڑ روپے-

 

LEAVE A REPLY