پاکستان کے مقابلے کیلئے پروٹیز بورڈ نے دوسرے درجے کی کرکٹ ٹیم کا انتخاب کیوں کیا؟


جنوبی افریقی کرکٹ بورڈ نے اپنے قومی ٹی ٹونٹی کھلاڑیوں کو انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) میں شامل ہونے کی اجازت دیکر پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کی ’’قربانی‘‘ بے وقعت کردی۔

تفصیلات کے مطابق جنوبی افریقہ کرکٹ بورڈ نے اپنے کھلاڑیوں کو آئی پی ایل میں کھیلنے کی اجازت دے دی جبکہ پی سی بی نے پی ایس ایل 6 کے بقیہ میچز کیلئے دورہ ملتوی بھی نہیں کیا۔

فرنچائز مالکان نے مارچ کے آخر میں اور اپریل کے آغاز میں ٹورنامنٹ مکمل کرنے کی سفارش کی تھی تاہم پی سی بی نے جنوبی افریقی کرکٹ بورڈ کو شدید مالی نقصانات کا حوالہ دیتے ہوئے اس تجویز کو مسترد کردیا تھا۔

پروٹیز نے اب خود بھارتی دباؤ میں آ کر سینئر کھلاڑیوں کو آئی پی ایس ایل کھیلنے کی اجازت دے کر اپنی ہوم سیریز کو بے وقعت کر دیا ہے جبکہ اب جنوبی افریقہ کی دوسرے درجے کی ٹیم پاکستان کا سامنا کرے گی۔

واضع رہے کہ پی ایس ایل6کو بعض کرکٹرزکے کورونا میں مبتلا ہونے کی وجہ سے 14میچز کے بعد ہی روک دیا گیا تھا، باقی 20مقابلے جون میں کرانے کا امکان ہے۔