پہلی بیوی کی بغیر اجازت دوسری شادی ، عدالت نے شوہر کی مشکل آسان کردی


لاہور : ہائی کورٹ نے پہلی بیوی کی بغیر اجازت دوسری شادی کرنے والے شوہر کی سزا معطل کردی ، جوڈیشل مجسٹریٹ نے 6 ماہ قید اور 5 لاکھ جرمانے کی سزا سنائی تھی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ میں پہلی بیوی کی اجازت کے بغیر دوسری شادی پر سزا کیخلاف اپیل پر سماعت ہوئی ، جسٹس عالیہ نیلم نے غلام حسین کی اپیل پر سماعت کی۔

عدالت نے پہلی بیوی کی اجازت کے بغیر دوسری شادی پر شوہر کی سزا کیخلاف اپیل پر فیصلہ سنادیا، فیصلے میں عدالت نے بغیراجازت دوسری شادی کرنےوالےشوہرکی سزامعطل کردی۔

عدالت نے فریقین کونوٹس جاری کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر جواب طلب کرلیا۔

جوڈیشل مجسٹریٹ نے 6 ماہ قید اور 5 لاکھ جرمانے کی سزا سنائی تھی ، جس کے بعد شوہر نے سزا کو لاہور ہائی کورٹ میں چیلنچ کیا تھا۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ مجسٹریٹ کے پاس پہلی بیوی کی اجازت کے بغیر دوسری شادی کرنے پر سزا کا اختیار نہیں ہے، مجسٹریٹ نے قانون کے برعکس سزا سناٸی ہے ۔ سیشن کورٹ میں فیصلے کے خلاف اپیل داٸر کی مگر وہ مسترد کر دی گئی۔

درخواست گزار نے استدعا کی تھی کہ ہاٸی کورٹ جوڈیشل مجسٹریٹ کی جانب سے دی گئی دوسری شادی پر قید اور جرمانے کی سزا کو کالعدم قرار دے۔