چینی سٹہ بازوں کے مزید تہلکہ خیز انکشافات ، کون کونسی شوگر ملز مکروہ دھندے میں ملوث ہیں؟ہوشربا تفصیلات آ گئیں


لاہور شوگر سکینڈل نے ملک بھر میں تہلکہ برپا کیا ہواہے،وفاقی تحقیقاتی ادارے(ایف آئی اے)نےحکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین اور ان کے بیٹے علی ترین کے خلاف کئی مقدمات بھی درج کئے ہیں جبکہ چینی کے سٹے میں ملوث 424 اکاونٹس منجمد کرتے ہوئے تحقیقات کا دائرہ وسیع کردیا ہے ،ایسے میں چینی سٹے باز مولوی ظہیر اور محمود اختر بھلی نے انکشاف کیا ہےکہ کسان، تاندلیانوالہ شوگر ملز اور جے ڈی ڈبلیوگروپ سٹہ کاروبار میں ملوث ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق چینی انکوائری کے معاملے پر شوگر سٹے بازوں کے مزید انکشافات سامنے آگئے ہیں ، سٹے باز مولوی ظہیر اور محمود اختر بھلی نے تمام شوگر ملز کے بروکرز کے ساتھ فارورڈ ٹریڈنگ کا کام کرنے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ کسان، تاندلیانوالہ شوگر ملز،جے ڈی ڈبلیوگروپ سٹہ کاروبارمیں ملوث ہے، بروکرز اور سٹے باز واٹس ایپ گروپس پر سٹے کا کام کرتے ہیں، ڈیلرز اور بروکرز میں عامر وحید، آصف ملتان، حاجی ہیرا فیصل آباد، طفیل، امجد حسین لاہور،سلیم میلسی، ماجدملک شامل ہیں جبکہ پاکستان شوگر گروپ،شوگر مرچنٹس بھی واٹس ایپ پر سٹے کے کاروبارمیں ملوث ہیں۔

محموداختربھلی نے انکشاف کیا کہ فارورڈ بکنگ اور سٹے میں جے ڈی ڈبلیو گروپ سرفہرست ہے جبکہ تاندلیا نوالہ شوگر ملز ایک ماہ کی فارورڈ بکنگ سٹہ کرتی ہے، تمام کچے کھاتے شوگر ملز کے کہنے پر بنائے جاتے ہیں، میں 18بے نامی بینک اکاؤنٹس رقوم منتقلی کیلئے استعمال کرتا رہا ہوں۔دوسری جانب چینی سٹے باز مولوی ظہیر نے کہا گزشتہ پانچ سال سے چینی کی بروکری سے وابستہ ہوں، قبل ازیں 12سال سے 30ہزار ماہوار پر بابر سنٹر میں بطور اکاؤنٹنٹ کام کرتا رہا ہوں۔ذرائع کے مطابق مولوی ظہیر نے بتایا کہ 2019ء میں لاہور کے اہم علاقے میں ایک کنال کا گھر خریدا، شوگر ملز بروکرز کیساتھ فارورڈ ٹریڈنگ کرتا تھا،مولوی ظہیر نے حمزہ شوگر (طیب گروپ)، ہنزہ (سویرا)شوگر ملز، المعیز شوگر ملز، کسان / مدینہ شوگر ملز کے سٹہ اور فارورڈ ٹریڈنگ کے مکروہ کاروبار میں ملوث ہونے کا بھی انکشاف کیا،فارورڈ ٹریڈنگ اور سٹے بازوں میں مولوی ظہیر کے ساتھ راشد ملتان، سلیم میلسی، خواجہ عمران، خواجہ احمد، ندیم آفتاب، مستنصر حسین گوگی شامل ہیں، سٹہ میں ملوث شوگر ملز 150سے 200روپے ماہانہ فی بوری کے حساب سے قیمت بڑھاتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق مولوی ظہیر کا کہنا تھا کہ مصنوعی طور پر بڑھائی گئی چینی کی قیمت میں اور دیگر سٹہ باز اپنے کچے کھاتوں میں درج کرتے ہیں اور تمام سٹہ باز واٹس ایپ گروپس اور بروکرز کے ذریعے سٹہ کا کام کرتے ہیں۔ مولوی ظہیر نے تمام شوگر سٹہ واٹس ایپ گروپ میں متحرک ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا تمام سٹے باز شوگر گروپ، پاکستان شوگر گروپ، شوگر مرچنٹس، شوگر ٹریڈر گروپ واٹس ایپ گروپس کے ذریعے سٹہ کے کاروبار میں ملوث ہیں،چینی سٹے باز نے بتایا کہ مورخہ رواں سال اکیس مارچ کو جون کے مہینے کی بکنگ 9750روپے فی بوری کی ڈیمانڈ ماجد ملک شوگر سٹہ باز کے کہنے پر انہیں سٹہ واٹس ایپ گروپس میں ڈالی۔