“ڈھائی سال ہوگئے اب ناتجربہ کاری کا بہانہ نہیں بنا سکتے، کارکردگی مزید بہتر بنانا ہوگی” وزیراعظم نے اپنی ٹیم پر واضح کردیا


اسلام آباد  وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اقتدار میں آئے تو 3 ماہ چیزوں کو سمجھنے میں لگے۔اب ناتجربہ کاری کا بہانہ نہیں بنا سکتے، کارکردگی کو مزید بہتر بنانا ہوگا۔

وزیراعظم عمران خان نے اپنی ٹیم کو واضح کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کے پاس سوا دوسال ہیں، اب کارکردگی دکھانا ہوگی، وزارتیں پرفارم نہیں کریں گی تو بہتر گورننس نہیں دے سکتے۔ انہوں نے کہا کہ 5سال کےبعدعوام فیصلہ کریں گےکہ ہماری حکومت کی کارکردگی کیسی رہی؟اب اپنی کارکردگی مزیدبہتربناناہوگی۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہمارے لیے پاور سیکٹر بہت بڑا چیلنج ہے، توانائی سیکٹر میں بہتری لانا ترجیح ہے۔18ویں ترمیم کےتحت وفاق اورصوبوں میں کچھ مسائل حل طلب ہیں،آٹاکسی کونہیں ملتاتوذمہ داری وفاق پرڈال دی جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرنٹ اکاؤنٹ کاسرپلس ہوناباعث اطمینان ہے،کرنسی کےاستحکام کے لیےکرنٹ اکاؤنٹ سرپلس رکھناچاہتےہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ مہنگائی ایک چیلنج ہے لوگوں پرزیادہ بوجھ نہیں ڈالنا،آہستہ آہستہ ہم کئی چیزیں سیکھتےجارہےہیں،وزارتوں سےمتعلق پوری بریفنگ ملنی چاہیے اورآنےوالی حکومت کوبریفنگ دینی چاہیے،تاکہ نئی آنے والی حکومت اپنی ٹیم بہتر تشکیل دے سکے۔

برآمدات بڑھانےتک مشکلات سےنہیں نکل سکتے،معاشی ترقی واستحکام کے لیےبرآمدات کافروغ ناگزیرہے،برآمدات میں اضافےکے لیے اٹھارہے ہیں اور اشیائے خورو نوش پر ڈھائی ہزار ارب کی سبسڈی دیں گے۔