کراچی میں نالہ صفائی آپریشن میں ایک اور خاتون کوہراساں کرنے کا انکشاف


کراچی : شہر قائد میں نالہ صفائی آپریشن میں ایک اور خاتون کوہراساں کرنے کا انکشاف سامنے آیا ، خاتون نے الزام لگایا کہ ہم سےگھر بچانے کے لیے ایک لاکھ رشوت طلب کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں نالہ صفائی آپریشن میں ایک اور خاتون کوہراساں کرنے واقعہ سامنے آگیا ، متاثرہ خاتون نے کے ایم سی عملے اور شہری پر سنگین الزام عائد کیا۔

خاتون نے بتایا ٹیم گھر گرانے کیلئے مارکنگ کرکے گئی، بتایاکچھ حصہ تجاوزات ہے، ہم سےگھر بچانے کے لیے ایک لاکھ رشوت طلب کی گئی، بڑی مشکل سے ہم نے ان کو 25ہزار روپے دیے۔

خاتون نے الزام لگایا کہ مزید رقم نہ دینے پرسرکاری عملے نے میسجز کرنا شروع کردیئے اور انسدادتجاوزات والے محلے کے ایک شخص کی مدد سے ہراساں کرتے رہے، ہراساں کرنے والے افراد میں عارف قاضی اور مسرور شامل ہیں۔

متاثرہ خاتون نے بیان میں کہا عارف قاضی نےمجھےپیغام یاوائس نوٹ بھیجے وہ سب موجود ہیں ، پیسے لینے کے باوجود انھوں نے گھر کو ضرورت سے زائد توڑا۔

خاتون نے وزیراعظم عمران خان اورسندھ حکومت سے انصاف فراہم کرنے کی اپیل کردی۔

یاد رہے اس سے قبل اپوزیشن لیڈر سندھ حلیم عادل شیخ نے کے ایم سی اینٹی انکروچمنٹ عملے پر نالوں کی صفائی کے دوران ایک طالبہ سے زیادتی کا سنگین الزام عائد کیا تھا۔