کمر دردکیلئے گھر سے سپیشل کرسی منگوائی تھی جو نیب نے عمران خان کے حکم پر واپس لے لی، شہبازشریف عدالت میں پھٹ پڑے


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)سابق وزیر اعلیٰ پنجاب اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے عدالت میں شکایت کی ہے کہ انہوں نے کمر درد کے لیے گھر سے سپیشل کرسی منگوائی تھی جو نیب نے وزیراعظم عمران خان کے حکم پر واپس لے لی۔نجی ٹی وی کے مطا بق احتساب عدالت میں شہباز شریف سمیت دیگر کے خلاف کیس کی سماعت ہوئی۔ نیب ٹیم نے شہباز شریف کو احتساب عدالت پیش کردیا۔اس موقع پر شہباز شریف نے عدالت سے کہا کہ عدالت نے گزشتہ سماعت پر مجھے کھانا دینے کے حوالے سے قابل ستائش حکم دیا، آپ کے گزشتہ نوٹس پر کھانے

کا معاملہ حل ہوگیا، جج صاحب سب کو علم ہے مجھے کمر کا درد ہے، اس کے لیے جو سپیشل کرسی میں نے گھر سے منگوائی تھی وہ عمران خان اور شہزاد اکبر کے حکم پر نیب نے لے لی۔شہباز شریف نے کہا کہ مجھ سے سپیشل کرسی لیکر مجھے عام کرسی فراہم کی گئی ہے۔ جس پر بیٹھ کر نماز پڑھتا ہوں اور کھانا کھاتا ہوں، اس کے باعث کمر درد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے، ایک شخص کو وہاں تکلیف دینا چاہتے ہیں جہاں اسے پہلے ہی تکلیف ہے، یہ کہاں کا انصاف ہے؟شہباز شریف نے عدالت سے مطالبہ کیا کہ کمر درد کی وجہ سے مجھے تھراپی کروانے کی اجازت دی جائے جس پر فاضل جج نے شہباز شریف کو ہدایت کی کہ آپ باقاعدہ درخواست لکھ کر دیں تفصیلی حکم عدالت جاری کر دے گی۔