کیپٹن (ر) صفدر نے مولانا فضل الرحمان ہاتھ کیوں چوما تھا؟لیگی رہنما نے خود ہی بتا دیا


کیپٹن  صفدر نے مولانا فضل الرحمان ہاتھ کیوں چوما تھا؟ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی تصویر کا کیا ماجرا ہے لیگی رہنما نے خود ہی بتا دیا

لیگی رہنما کیپٹن ریٹائرڈ صفدر نے بتایا کہ مولانا فضل الرحمان نے ختم نبوت کے حوالے سے بات کی تھی جس کی وجہ سے ان کا اس عقیدت کے باعث ہاتھ چوم لیا۔ یہ بیان انہوں نے اشتعال انگیز تقریر کیس میں لاہور کی مقامی عدالت میں پیشی کے موقع پر دیا۔

کیپٹن(ر) صفدر نے کہا کہ شریف خاندان گرفتاریوں سے نہیں گھبراتا، سب کے سامنے ہے کہ میاں نواز شریف نے خود کو بھی گرفتاری کے لیے پیش کر دیا تھا، انہوں نے دعویٰ کیا کہ موجودہ حکومت 2 ماہ میں گھر چلی جائے گی۔

لیگی رہنما نے کہا کہ تحریک انصاف کو بغیر کسی تیاری کے 2018 میں حکومت مل گئی انہیں خود یقین نہیں تھا کہ ان کی حکومت آ جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ پی ٹی آئی کی قیادت رات کو ہار کر سو گئی ان کو جگا کر بتایا گیا کہ ان کی حکومت آ گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف حکومت کو اس طرح چلا رہی ہے جیسے موت کے کنویں میں موٹرسائیکل چلا کر کرتب کر کے دکھایا جاتا ہے۔ انہوں نے پی ڈی ایم کی تحریک کے خلاف حکومت مخالف بیانات کے جواب میں کہا کہ وہ کہتے ہیں پی ڈیم ایم سے ہوا نکل گئی یہ غبارہ ہمارا ہی ہے ہم جب چاہیں اس میں ہوا بھر لیں۔

کیپٹن ریٹائرڈ صفدر نے کہا کہ نواز شریف پاکستانی تھے ہیں اور رہیں گے وہ جب چاہیں گے پاکستان آ جائیں گے، حکومت کے مشکیزے سے کیسے ہوا نکلتی ہیں اب ہم ان کو دکھائیں گے اور عوام بھی دیکھ لیں گے۔