ایسا انتظام اور سلوک کہیں نہیں دیکھا، سکھوں کے بعد ہندو یاتری بھی اپنے ساتھ ہونیوالے سلوک سے متاثر،پاکستان زندہ باد کے نعرے

لاہور (نیوز ڈیسک)ہندو مذہب کے تہوار مہا شیو پوجاکی مرکزی تقریب کٹاس راج مندر چکوال میںمنعقد ہوئی جس میں بھارت سے آئے 127ہندو یاتریوں کے علاوہ ملک بھر کی ہندو برادری سے تعلق رکھنے والے افراد نے مذہبی رسومات ادا کیں ۔چیئرمین متروکہ وقف املاک بورڈ طاہر احسان مہمان خصوصی تھے جبکہ ڈپٹی سیکرٹری فراز عباس ،پی آر او عامر حسین ہاشمی ،پروفیسر خورشید کمال ، عاشو جی ،ڈی پی او ،ڈی سی او چکوال و دیگر سیاسی و سماجی شخصیات نے شرکت کی ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین بورڈ طاہر احسان نے کہاکہ پاکستان میں ہندو برادری سمیت دیگر اقلیتوں کو مکمل مذہبی آزادی حاصل ہے ،ہم ہر بار ہندو یاتریوں کی بہترین انداز میں مہمان نوازی کے لیے ہمیشہ تیار ہتے ہیں ،پاکستان اور بھارت کے مابین تعلقات کے فروغ سے خطے میں امن لایا جاسکتا ہے۔ہندو جتھہ کے پردھان شیو پرتاب بجاج نے کہا کہ ہم کٹاس راج مندرکے لیے چیف جسٹس پاکستان اور وزیرا عظم عمران خان کے اقدامات کو سراہتے ہوئے انکا شکریہ ادا کرتے ہیں انہوںنے کہاکہ موسم بدلے، حکومتیں بدلیں،دونوں جانب کے افسر بدلے، مگر پاکستان میں ملنے والی محبتوں میں اضافہ ہوتا چلا جا رہا ہے36سال سے کٹاس راج یاترا کے لئے آرہے ہیں، ہر سال بھارتی شہریوں کو سہولیات کی فراہمی کے حوالے سے نئے اقدامات دیکھنے کو ملتے ہیں پاکستان ہمیں اپنا دوسرا گھر لگتا ہے ۔کٹاس راج کے قدیم مندروں اور حویلی کی بہترین دیکھ بھال پر حکومت پاکستان اور متروکہ وقف املاک بورڈ حکام کے شکر گذار ہیں۔سیکرٹری بورڈ طارق وزیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کٹاس ہندو مذہب کے قدیمی ورثہ ہے جس کے لیے تمام تر صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے ہم نے اسکی حفاظت اور تزئین وآرائش کی ہے ،اسکی سیکورٹی کے لیے دن رات عملہ تعینات رہتا ہے ہندو یاتریوں کے لیے رہائشی کمپلیکس،واش رومز زیر تکمیل ہے جبکہ دیگر سہولیات کے لیے اقدمات کیے گئے ہیں ۔تقریب میں موجود ہندو یاتریوں نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ بھارت اور پاکستان کے عوام ایک دوسرے کو ملنا چاہتے ہیں، دونوں جانب اعتماد کی فضاء پروان چڑھ رہی ہے کرتار پور راہداری کھلنا ایک تاریخی اقدام ہے، جس کے دور رس نتائج سامنے آئیں گے۔ متروکہ وقف املاک بورڈ حکام نے گذشتہ روز استقبالیہ تقریب سجا کر سبھی کے دل ایک بار پھر جیت لئے ہیں ۔تقریب کے آخر میں بھارت سے آئے ہندو یاتریوں نے پاکستان زندہ بار کے نعرے بلند کیے ۔ہندو یاتری ایک روز کٹاس راج میں قیام کرنے کے بعد 13دسمبر کو لاہور پہنچیں گے جبکہ 15دسمبر کو دورہ مکمل ہونے پر واہگہ بادرڈر کے راستے واپس بھارت چلے جائیں گے۔