مصری اداکارہ اتنا ’فحش‘ لباس پہن کر تقریب میں آگئی کہ مقدمہ قائم کردیا گیا

قاہرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ دنوں مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں ایک فلم فیسٹیول ہوا جس میں رانیا یوسف نامی مصری اداکارہ ایسا لباس پہن کر آ گئی کہ اس کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔ میل آن لائن کے مطابق 45سالہ رانیایوسف نے سیاہ رنگ کا جالی دار لباس پہن رکھا تھا جس میں سے اس کے بازو اور ٹانگیں نظر آ رہی تھیں۔ رانیا کے خلاف وکلاءکے ایک گروپ نے چیف پراسیکیوٹر کو درخواست دی تھی جس میں موقف اپنایا گیا کہ اداکارہ عوامی جگہ پر فحاشی کی مرتکب ہوئی ہے جو کہ مصر میں قانوناً جرم ہے۔

رپورٹ کے مطابق وکلاءکی درخواست پر اداکارہ رانیا کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیاہے اور 12جنوری سے عدالت میں اس کی سماعت شروع ہو گی۔ اگر اداکارہ پر لگایا گیا الزام درست ثابت ہو گیا تو اسے مصری قانون کے مطابق پانچ سال تک قید کی سزا ہو سکتی ہے۔اس مقدمے کی ایک مثال 2016ءمیں سامنے آئی جب ایک ناول نگار کو فحش نگاری کے جرم میں 2سال قید کی سزا سنا دی گئی۔ اس پر الزام تھا کہ اس نے اپنی ایک کتاب میں سیکس اور منشیات کا حوالہ دیا تھا۔