مشکوک ڈرون طیارے کی اڑان، لندن کے گیٹ وک ایئرپورٹ پر تیسرے روز بھی فلائٹ آپریشنز معطل،پولیس اور سیکورٹی ادارے بے بس ہوگئے

لندن (این این آئی) مشکوک ڈرون طیارے کی اڑان کے باعث لندن کے گیٹ وک ایئرپورٹ پر تیسرے روز بھی فلائٹ آپریشنز معطل رہا۔تفصیلات کے مطابق مشکوک ڈرون طیارے کی اڑان کے باعث لندن کے گیٹ وک ایئرپورٹ پر تیسرے روز بھی فلائٹ آپریشنز معطل رہا۔ حکام کے مطابق ایئر فیلڈ کے نزدیک وقفے وقفے سے نظر آنیوالے ڈرونز کی تلاش جاری ہے تاہم ملزم اب تک نہیں پکڑا جاسکا ہے۔ حکام کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 50 دفعہ ڈرونز دیکھے گئے جس کے باعث 760 پروازیں منسوخ اور ایک لاکھ 20 ہزار سے زائد مسافر متاثر ہوئے ہیں۔ ایئرفیلڈ کے نزدیک وقفے وقفے سے نظر آنیوالے ڈرونز کو مار گرانے کیلئے برطانوی پولیس کے اسنائپر اور فوجی اہلکار موقع کی تلاش میں ہیں جبکہ ملزم کی تلاش کیلئے خفیہ ایجنسی کی بھی مدد لی گئی ہے۔ماہرین کے مطابق ماہر ڈرون آپریٹر5 میل کے فاصلے پر موجود ہوسکتا ہے، پولیس کا کہنا ہے کہ یہ یقین ہے کہ ڈرون آپریٹر کا مقصد ایئرپورٹ کے پروازوں کو نظام کو متاثر کرنا ہے۔جبکہ برطانوی وزیر اعظم تھریسامے نے کہا ہے کہ وقت پڑنے پر پولیس کے اختیارات میں اضافہ کیا جاسکتا ہے، ایئر پورٹ حکام نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ پروازوں میں تاخیر کا سلسلہ کرسمس کی شام تک جاری رہ سکتا ہے۔ مشکوک ڈرون طیارے کی اڑان کے باعث لندن کے گیٹ وک ایئرپورٹ پر تیسرے روز بھی فلائٹ آپریشنز معطل رہا۔تفصیلات کے مطابق مشکوک ڈرون طیارے کی اڑان کے باعث لندن کے گیٹ وک ایئرپورٹ پر تیسرے روز بھی فلائٹ آپریشنز معطل رہا۔حکام کے مطابق ایئر فیلڈ کے نزدیک وقفے وقفے سے نظر آنیوالے ڈرونز کی تلاش جاری ہے تاہم ملزم اب تک نہیں پکڑا جاسکا ہے۔