شادی کی تقریب میں صرف ایک ہزار روپے کیلئے سسرالیوں نے پاکستانی دولہے کے کپڑے پھاڑ دیے

لاہور تھانہ سندر کے علاقے مراکہ میں شادی کی تقریب میں دودھ پلائی کی رسم کے دوران دولہا اور دلہن والوں کا آپس میں جھگڑا ہو گیا۔ دونوں گروپوں نے ایک دوسرے کو تشددکا نشانہ بنایا جس سے ایک خاتون بے ہوش جبکہ چار افراد زخمی ہوگئے ۔ جھگڑے کے دوران دولہا کے کپڑے پھاڑ دیے گئے۔
دودھ پلائی کی رسم کے دوران دلہن والوں نے2 ہزار روپے مانگے جبکہ لڑکے والے ایک ہزار روپے دینے پر بضد تھے جس پردولہے اوردلہن والوں کا آپس میں جھگڑا ہو گیا۔ دونوں گروپوں نے ایک دوسرے کو ٹھڈوں، مکوں اور ڈنڈوںسے تشددکا نشانہ بنایا جس کی وجہ سے علاقہ میدان جنگ بن گیا۔دولہے سمیت متعدد افرد کے کپڑے پھٹ گئے۔

دولہا ندیم حبیب آباد سے بارات لے کر لاہورآیا تھا۔مار پڑنے کے بعد باراتیوں نے احتجاجاً ملتان روڈ بلاک کردی جس سے گاڑیوں کی میلوں لمبی قطاریں لگ گئیں، واقعہ کا علم ہونے پر سندر پولیس بھی موقع پر پہنچ گئی اور باراتیوں کو قانونی کارروائی کی یقین دہانی کے بعد ٹریفک بحال کردی گئی جبکہ دولہا دلہن کے بغیر بارات لے کر واپس پتوکی روانہ ہوگیا۔ خیال رہے کہ یہ واقعہ اپریل 2018 میں پیش آیا تھا۔