مجھے 19 سال کی عمر میں ہراسانی کا نشانہ بنایا گیا : لیڈی گاگا

نیویارک(این این آئی)معروف امریکی گلوکارہ لیڈی گاگا نے انکشاف کیا ہے کہ جب انہوں نے اپنے کیرئیر کا آغاز کیا تو انہیں مسلسل ہراساں کیا جاتا تھا۔32 سالہ گلوکارہ و اداکارہ نے ہولی وڈ رپورٹرز سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ 19 سال کی عمر میں انہیں ہراسانی کا نشانہ بنایا گیا مگر ساتھ یہ بھی تسلیم کیا کہ کاش انہوں نے اس بارے میں پہلے عوامی سطح پر بات کی ہوتی۔ان کا کہنا تھا کہ ناپسندیدہ پیشرفت کو اصول سمجھا جاتا تھا اور کوئی بھی انہیں تحفظ فراہم کرنے کیلئے تیار نہیں تھا۔انہوں نے کہا ‘جب میں نے موسیقی کا

کیرئیر کا آغاز کیا تو میں 19 سال کی تھی،اس وقت اس بزنس میں ہراساں کرنا استثنیٰ نہیں بلکہ اصول تھا، جب آپ کسی ریکارڈنگ اسٹوڈیو میں جاتے تو وہاں آپ کو ہراساں کیا جاتا۔لیڈی گاگا کا کہنا تھاایسا ہی ہوتا تھا، تو میری خواہش ہے کہ میں کافی پہلے اس پر آواز اٹھاتی، میں نے بات کی تھی اور نوجوانی میں مجھے ہراساں کیا گیا اور میں نے لوگوں کو بتایا بھی۔انہوں نے کہا کہ اگرچہ آواز تو ہراسانی کیخلاف آواز تو بلند کی مگربوائز کلب کلچر حملہ آوروں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے سے روکتا تھا۔ان کے بقول کوئی بھی اپنی طاقت کھونا نہیں چاہتا، تو وہ آپ کو اس لیے تحفظ فراہم نہیں کرتے کہ انہیں ہمدردی ہے بلکہ ایسا ہونے سے ان کی طاقت چھن جاتی تھی، میں توقع کرتی ہوں کہ اس بارے میں خواتین کی آواز ایک جگہ جمع ہوگی اور ہراسانی حملوں اور یکساں معاوضے جیسے معاملات کو اس تحریک میں دیکھا جائے گا۔وہ ماضی میں تسلیم کرچکی ہیں کہ ہراسانی کا نشانہ بننے کے بعد وہ ڈپریشن کا شکار رہی تھیں۔