پیراسیٹامول سیرپ میں کانچ کے ذرات نکل آئے، پاکستان بھر میں کھلبلی ، کروڑوں بچوں کی زندگیاں دائو پر لگ گئیں

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) محکمہ صحت سندھ کی جانب سے لیڈی ہیلتھ ورکرز کو فراہم کی جانے والی پیرا سیٹامول سیرپ ناقص نکلا۔ چھوٹے بچوں کو بخار کی صورت میں دینے کیلئے مفت فراہم کی گئی سیرپ میں کانچ کے ذرات نکل آئے، جس پر ہزاروں بوتلیں واپس لے لی گئیں۔ روزنامہ امت کے مطابق نیشنل پروگرام کے تحت ضلع سانگھڑ میں لیڈی ہیلتھ ورکرز کو فیلڈ میں عوام کو مفت میں مختلف بیماریوں کے علاج کے لئے ادویات دی جاتی ہیں، اس حوالے سے لیڈی ہیلتھ ورکرز کو چھوٹے بچوں کے بخار کے علاج کے لئے جو پیراسیٹامول کے سیرپ دئیےگئے تھے۔ اس کے معیار و رزلٹ کے متعلق عوام و عملے نے شکایات کرتے ہوئے اس سیرپ میں کانچ ودیگر ذرات کے موجود ہونے کا انکشاف کیا۔ ہزاروں بوتلوں میں کانچ کے ذرات و گٹھلی نما اجزا سے بچوں میں بخار اترنے کے بجائے ان کے استعمال سے بچوں کو نقصان پہنچنے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔ اس ضمن میں رابطہ کرنے پر ڈی ایچ او آفس سانگھڑ کے فوکل پرسن ڈاکٹر علی محمد جونیجو نےبھی اس کی تصدیق کی اور کہا سیرپ کا ٹیسٹ بھی کروایا جائے گا۔‎