309ارب کی کامیاب بولی، مہمند ڈیم تعمیر کرنے کا ٹھیکہ ڈیسکو اور چینی کمپنی نے حاصل کرلیا،کتنا پانی ذخیرہ اور کتنے میگا واٹ بجلی پیدا ہوگی ،خیبر پختونخوا کے کون کون سے شہر سیلاب سے بچائے جا سکیں گے؟بڑی خوشخبری سنا دی گئی

اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک ) پاکستانی جوائنٹ وینچر ڈیسکو اور چینی کمپنی ’’چائنا گھیزوبا ‘‘کمپنی نے 309 ارب روپے کی بولی دے کر مہمند ڈیم کا ٹھیکہ حاصل کرلیا ۔ مہمندڈیم میں تین لاکھ کیوسک پانی زخیرہ کرنے کے علاوہ 800میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت ہوگی۔یہ بنیادی طور پر سیلاب پر کنٹرول کرنے لئے تعمیر کیا جارہا ہے جس سے چار سدہ ،پشاور اور نوشہرہ کو سیلاب سے بچائے گا۔روزنامہ جنگ کے مطابق دو ہزار تین میں ڈیم کی تعمیر کی لاگت ایک ارب ڈالر تھی جو اب بڑھ کر تین ارب ڈالر ہوگئی ہے جس کی وجہ مشرف دور میں اس کی تعمیر میں تاخیر تھی۔اگر یہ ڈیم وقت مقررہ پر تعمیر ہوجاتا تو 2010کے سیلاب میں دس ارب ڈالر کا نقصان ہونے سے بچایا جاسکتا تھا۔ ڈیم ایک امریکی کمپنی کو دیا گیا تھا (AMZO)جس نے آٹھ سال تک تاخیر کی جس کا خمیازہ ملک کو 152ارب روپئے کے نقصان سے بھگتنا پڑا۔پیپلز پارٹی کی حکومت نے یہ ذمے داری امریکی کمپنی سے واپس لے کر واپڈا کے سپرد کی جس کے بعد جاپان اور آسٹریلیا کی کمپنیوں نے تفصیلی انجیرنگ کا کام کرکے منصوبہ 2014میں واپڈا کے حوالے کیا۔