موٹر سائیکل پر پیچھے بیٹھنے والوں کیلئے بھی ہیلمٹ پہننے کی پابندی کا اطلاق ،قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ ، خواتین پریشان

لاہور (آئی این پی) موٹر سائیکل پر پیچھے بیٹھنے والوں کیلئے بھی ہیلمٹ پہننے کی پابندی کا اطلاق (آج) یکم دسمبر سے ہوگا جس پر پہلے مرحلے میں مال روڈ پر عملدرآمد کرایا جائے گا ، دکانداروں نے ہیلمٹ کی مانگ دیکھتے ہوئے ایک بار پھر قیمتوں میں اضافہ کر دیا ، خواتین کی اکثریت فیصلے سے ناخوش ہیں جبکہ شہری فیملی کے ہمراہ موٹر سائیکل پر سفر کرنے کے حوالے سے پریشانی کا شکار ہو گئے ہیں ۔ تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے حکم پر ٹریفک پولیس نے موٹر سائیکل پر پیچھے بیٹھنے والوں کیلئے بھی ہیلمٹ پہننے کی

پابندی پریکم دسمبر سے عملدرآمد کیلئے تیاریاں مکمل کر لی ہیں اور اس سلسلہ میں حکمت عملی مرتب کر لی گئی ہے ۔ پہلے مرحلے میں مال روڈ پر پابندی کا اطلاق کرایا جائے گا جبکہ اس کے بعد بتدریج شہر کی دوسری شاہراہوں پر بھی موٹر سائیکل سوار دونوں افراد کیلئے ہیلمٹ کی پابندی لازمی قرار دی جائے گی ۔ دوسری طرف ایک بار پھر ہیلمٹ کی مانگ بڑھ گئی ہے جس کی وجہ سے قیمتوں میں بھی اضافہ دیکھا گیا ہے ۔حکومت کی جانب سے قیمتوں کو کنٹرول میں رکھنے یا ماضی کی طرح مختلف مقامات پر سٹالز لگا کر کنٹرول ریٹ پر فروخت کیلئے تاحال کوئی اقدامات نظر نہیں آئے ۔ خواتین کی اکثریت فیصلے سے نا خوش ہیں اور انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ خواتین کو اس سے استثنیٰ دیا جائے ۔ خواتین کا کہنا ہے کہ اب وہ رکشے پر سفر کو ترجیح دیں گی ۔بچوں کے ہمراہ موٹر سائیکل پر سفر کرنے والے شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت غریب کو بھی کوئی حل بتائے ، پہلے ہی اتنی مہنگائی ہے اب رکشے کا کرایہ کیسے برداشت کریں گے ۔ موٹر سائیکل پر پیچھے بیٹھنے والوں کیلئے بھی ہیلمٹ پہننے کی پابندی کا اطلاق (آج) یکم دسمبر سے ہوگا جس پر پہلے مرحلے میں مال روڈ پر عملدرآمد کرایا جائے گا ، دکانداروں نے ہیلمٹ کی مانگ دیکھتے ہوئے ایک بار پھر قیمتوں میں اضافہ کر دیا