تین اہم سیاسی شخصیات کا قتل،قانون نافذ کرنے والے اداروں سے باقاعدہ جنگ کامنصوبہ ناکام، اہم سیاسی جماعت کے گرفتارملزمان کے سنسنی خیز انکشافات

کراچی(نیوزڈیسک)ایم کیو ایم لندن کے گرفتار مبینہ دہشتگردوں نے انکشاف کیا ہے کہ متحدہ لندن قانون نافذ کرنے والے اداروں سے لمبی جنگ کی منصوبہ بندی کررہی ہے۔ایم کیو ایم لندن کے گرفتار ملزمان نے ساؤتھ افریقہ فرار کی تیاریاں مکمل کرلی تھیں۔ مستقیم اور مقیم کے موبائل ڈیٹا سے ایم کیو ایم لندن کے ساؤتھ افریقہ نیٹ ورک کی اہم تفصیلات مل گئی ہیں۔ایم کیو ایم لندن کے گرفتار مبینہ دہشتگردوں نے انکشاف کیا ہے کہ واٹس اپ کے ذریعے ساؤتھ افریقہ میں کی گئی وارداتوں کی ویڈیوز ساؤتھ افریقہ میں متحدہ نیٹ ورک کی طاقت کے اظہار کیلئے بھیجی جاتی تھیں۔ملزمان نے بیان دیا ہے کہ سیاسی جماعتوں کے بعض رہنماؤں کو قتل کرنے کی حکمت عملی بنانے کے احکامات ملے تھے۔ تین سیاسی رہنماؤں کے قتل کی وارداتوں چند دنوں میں مکمل کرنا تھا۔ملزمان نے انکشاف کیا کہ متحدہ لندن قانون نافذ کرنے والے اداروں سے لمبی جنگ کی منصوبہ بندی کررہی ہے۔ ایم کیو ایم ساتھ نیٹ ورک کے ذریعے کارروائیوں اور حکمت عملی کی تیاری کی جاتی ہے۔ملزم نے کہا کہ 1996 اور پھر 1997 میں ساؤتھ افریقہ گیا اور 2005 میں واپس آکر روپوش رہا۔ لندن کے احکامات ساتھ نیٹ کے شجاع بوبی کے ذریعے ملتے تھے۔